پاکستانی زبانیں اور نو آبادیاتی ادب دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس 16-17 مارچ 2018ء

شعبہ پاکستانی زبانیں علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی، اسلام آباد

وطنِ عزیزمیں لسانی ہم آہنگی ، قومی یکجہتی اور ملکی سا لمیت کو پاکستانی زبانوں کے ذریعے استحکام دینے کے لیے ۱۹۹۸ ء میں علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی میں شعبہ پاکستانی زبانیں کا قیام عمل میں لایاگیا۔پاکستانی زبانوں کے مشترک نقوش، بین اللسانی روابط اور مشترک ادبی رجحانات کا کھوج لگانا اور پاکستانی زبانوں کومضبوط مطالعاتی اور تحقیقی بنیادیں فراہم کرنا، شعبے کے بنیادی مقاصد میں شامل ہے۔ شعبے نے مذکورہ مقاصد کو پیش نظررکھتے ہوئے ۲۰۰۴ء میں ملک میں پہلی مرتبہ ایم فل پاکستانی زبانیں و ادب کا اجرا کیا جو اپنی نوعیت کا پہلا منفرد پروگرام تھا۔ اس پروگرام کی کامیابی کے بعد ۲۰۰۸ ء میں پی ایچ ڈی پاکستانی زبانیں و ادب کا آغاز کیا گیا اور اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے اب تک براہوئی، بلوچی، پشتو،پنجابی، سرائیکی اور سندھی  زبان و ادب کے طلبہ و طالبات کی ایک کثیر تعداد ایم فل اور پی ایچ ڈی مکمل کرچکی ہے اور اب  اس ضمن میں “پاکستانی زبان و ادب “کے نام سے تحقیقی مجلے  کااجرا بھی ہو چکا ہے۔ اس کے علاوہ پاکستانی زبانوں میں ریسرچ کلچر کے فروغ کے لیے شعبہ وقتاً فوقتاً ریسرچ کانفرنسز کا انعقاد بھی کرتا رہتا ہے۔ “پاکستانی زبانوں کے ادب میں امن و آشتی کا پیغام” پر (28-29 اپریل 2017) دورروزہ قومی کانفرنس کے کامیاب انعقاد کے بعداب “پاکستانی زبانیں اور نو آبادیاتی ادب” کے موضوع پر دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس  کا انعقاد بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے، جو 16-17 مارچ 2018ء کو علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے مین کیمپس میں انعقاد پذیر ہو گی۔ کانفرنس تھیم، مقاصد اور ذیلی موضوعات حسبِ ذیل ہیں